Monday, 4 September 2017

جادو کی علامات

جادو کی علامات 

اس سےپہلےکہ علامات بیان کروں ایک بات عرض کرنا چاہتا ہوں کچھ لوگ کہتے ہیں ہم پر جادو کوئی کیوں کرے گاجب کہ ہم نے کسی پر نہیں کیا یا آج کے جدید دور میں جب کہ ہر  مرض کا علاج ادویات سےممکن ہے تو ان چیزوں پر یقین کرنا جہالت ہے یہ ضروری نہیں آپ کسی پر جادو کریں یا کوئی اور تکلیف دیں گےتوہی آپ پر دشمن   جادو کروا کر بدلہ لے گا اصل میں سب دکھ سکھ اللہ کی طرف سےہیں  یہ جادوئی تکلیف اللہ کی طرف سے بطور امتحان بھی ہو سکتی یا پھر ہمارے کسی گناہ کی سزابھی  زیادہ  تر جادو  حسد   لالچ  اور  بدلے  کی  آگ کی۔ وجہ سے کروایا جاتا ہے  ہر بندے پر جادو اثر کرے یا سارے مسائل جادو سے ہی پیدا ہوں یہ ضروری نہیں کچھ لوگ ہر مسلے کو جادو جنات سے تشبیح دیتےہیں جو کے درست نہیں  رہی بات ہر مرض کا دوا سے علا ج ممکن ہونا یہ بات کافی حد تک درست بھی ہے لیکن ہمیں اکثر مریض دیکھنے کو ملتے ہیں جن کو کسی بھی دوا سےفائدہ نہیں ہوتا کسی میڈیکل ٹیسٹ مں مرض بھی نہیں ملتی بندہ۔پھر بھی بیمار ہے جیسے کوئی اللہ کا بندہ کلام الہی سے دم کرےتو اسے شفا ہونا شروع ہو جاتی ہے مطلب یہ کہ روحانی بیماریو ں کا علاج  کلام الہی اور طبی امراض کا علاج دوا سے ہو گا 
  ۔
یہاں ہم مختصراً چند ایسے نقصا نات کا ذکر کرتے ہیں جوعام طور پر دیکھنے میں آتے ہیں ۔ ان کا یہ مطلب ہرگز نہیں کہ جادو کی صرف یہی چند علامات ہیں۔ بلکہ ان کا تذکرہ محض اپنے قارئین کو جادو کی پہچان کے قریب تر لانے کے لئے کر رہے ہیں۔

(۱) میاں بیوی کی جدائی :
بعض دفعہ جادو کی وجہ سے میاں اور بیوی کے درمیان نفرت اور پھوٹ پید ا کردی جاتی ہے ۔ جو چلتے چلتے طلاق تک جاپہنچتی ہے۔ اگر دیکھیں کہ میاں اور بیوی بات بے بات پہ لڑپڑتے ہیں یا بلا وجہ ایک دوسرے پر نکتہ چینی اور اعتراضات کی بوچھا ڑ کرتے ہیں اور بعد میں سر پکڑکے بیٹھ جاتے ہیں کہ یہ ہم نے کیا کیا ؟ تو پانی سروں سے اونچا ہونے سے پہلے کسی ماہر معالج سے رابطہ کرلیں 
 :(۲)گھر میں دل نہ لگنا:
بعض دفعہ کسی کو کسی گھر سے اکھا ڑنے کے لئے ایسا جادو کیا جاتا ہے کہ وہ شخص ہر جگہ خوش باش رہتا ہے لیکن اس گھر (یا دکان وغیرہ ) میں آتے ہی اس کا دل اداس اداس، پریشا ن پریشان سارہنے لگتا ہے ۔وہاں گھٹن سی محسوس ہوتی ہے جو وہاں سے باہر نکلتے ہی ختم ہوجاتی ہے۔

(۳)میاں بیوی میں نفرت :
بعض دفعہ میا ں بیوی میں مشترکہ نفرت کی بجائے یکطرفہ نفرت کا عمل کیا جاتاہے۔ اگر میاں پر جادو کیا گیا ہے تو وہ بیوی سے نفرت کرنے لگے گا اور بیوی پر کیا گیا ہے تو وہ خاوند سے نفرت کرنے لگے گی۔ کسی وقت جب وہ شخص (میاں یا بیوی ) اس سحری جال سے باہر آتا ہے تواسےاحساس ہوتا ہے کہ یہ میں کیا کر رہا ہوں ؟ لیکن بعد میں بے اختیار وہ دوبارہ وہی حرکت کرتا ہے ۔

(۴)نامعلوم بیماری :
کچھ لوگ کسی سے انتقام لینے کے لئے اس پر نا معلوم بیماری مسلط کر دیتے ہیں۔ بے جہت،بے سمت اور نامعلوم بیماری کا کوئی سر اپکڑا نہیں جاتا ۔ کبھی سر میں تکلیف ہے تو کبھی گھٹنوں میں ! کبھی معدے میں درد ہے تو کبھی کمر میں ! ایک بیماری جاتی نہیں کہ دوسری آدھمکتی ہے۔ اکثر اوقات بیماری ڈاکٹروں کی سمجھ سے بھی باہرہوتی ہے اور میڈیکل ٹیسٹ میں بھی ظاہر نہیں ہورہی ہوتی (یہ ہمارا روزمرہ کا مشاہد ہ ہے)۔

(۵) پورا گھر بیمار رہتا ہے :
بعض دفعہ بیماری کسی شخص کی بجائے پورے گھر پر مسلط کردی جاتی ہے ۔ کبھی کوئی گر پڑتا ہے کبھی کوئی ! ایک بیمار ابھی صحت یاب ہوا نہیں کہ دوسرا بستر پہ پڑگیا ۔ گھر سے دوائیں نکلنے کا نام نہیں لیتیں ۔

(۶) رشتے کی بندش :
لڑکی خوبصورت بھی ہے، تعلیم یافتہ بھی، جہیز کی بھی پر ابلم نہیں، عمر بھی مناسب ہے، رشتے موجود بھی ہیں ۔ لیکن رشتہ کہیں طے نہیں ہوپاتا ۔ یا تو رشتہ گھر تک پہنچتا ہی نہیں! اگر کوئی بھولے سے آہی جائے تو رشتہ طے نہیں ہوتا۔

(۷)اولاد کی بندش :
میاں بیوی دونوں کی میڈیکل رپورٹ صحیح ہے، مگر اولا د نہیں ہوتی ۔ یا بچے پیٹ میں مر جاتے ہیں ۔ یادوسرے تیسرے مہنیے ہی میں ڈی این سی کرانا پڑجاتی ہے ۔یابچہ پیدا ہونے کے چالیس دن کے اندر اندر پیلے اور سبز رنگ کے دست کرتا ہوا مرجاتا ہے اور مرتے وقت اس کا اکثر جسم بھی سبز ہوگیا ہوتا ہے

۸)رزق کی بندش :
دکان ہے تو دکان نہیں چلتی، ملازمت نہیں ملتی، آمدن میں بے برکتی پڑجاتی ہے۔ جتنیآمدن ہوتی ہے اس سے زیادہ کے غیر ضروری اخرا جات نکل آتے ہیں ۔ رزق اور مال دودلت کے تمام راستے اپنے اوپر بند ہوتے نظر آتے ہیں۔
(۹) حلیہ بگاڑنا :
جوان لڑکوں اور لڑکیوں پر کسی حسد اور جلن کے نتیجے میں یا انتقام کے جذبے سے ایسا جادو بھی کر دیا جاتا ہے کہ ان کا چہرہ بگڑ جائے   اور کسی کام  کا نہ رہے اس صورت میں شیطانی مخلوق اس میں اکثر حاضر رہنا شروع کردیتں ہیں اور مریض کو اپنےاوپر اختیار نہیں رہتا وہ بلاوجہ عجیب عجیب حرکات اور فضول گفتگو  منہ کو مروڑ مروڑ کےکرتا ہے (۱۰)کپڑے کٹنا :  بعض دفعہ سحر سے جسم پر اثرات مرتب ہونے کی بجائے کپڑے کٹنا شروع ہوجاتے ہیں۔ الماری میں پڑے پڑے کپڑے کبھی ایسے کٹتے ہیں جیسے کسی نے ریزر سے کاٹے ہوں اور کبھی گو لائی میں کپڑا کاٹا جاتا ہے۔
بعض لوگوں کے کپڑے کٹنے کی بجائے جل جاتے ہیں۔ اور جلتے بھی اس طرح ہیں جیسے کسی نے چھوٹی سی چنگا ری رکھی جس سے تھوڑی جگہ جلی اور باقی کپڑا سلامت ۔ اب باقی کپڑا بھلے سلامت رہے آدمی ایسا سوٹ پہن کر کہاں جائے جس میں تین چار بڑے بڑے سوراخ بن گئے ہوں اور جلنے کا نشان صاف نظر آرہا ہو؟بعض اوقات کپڑوں کے کٹنے کا اثر آدمی کی صحت اور جان پر بھی پڑتا ہے
(۱۱) گا ہک کی بندش :
بعض دفعہ کسی دکان پر ایسا جادو کرایا جاتاہے کہ گاہک اول تو اس میں داخل ہی نہیں ہوتا اور بھولے سے کوئی آہی جائے تو اسے ایسی گھبراہٹ ہوتی ہے کہ جب تک وہ دکان سے نکل نہ جائے، تب تک اسے چین ہی نہیں آتا۔
بعض دفعہ ایسا ہوتا ہے کہ ایک ہی چیز جس قیمت پر گاہک دوسرے وکاندار سے لینے کو تیار ہے،آپ سے نہیں لیتا، کبھی تو اس سے کم قیمت پر بھی نہیں لیتا  (۱۲) دکان، فیکٹری کی بندش :
دکان یا فیکٹری کی بندش میں ایک حربہ یہ ہوتا ہے کہ آپ دکان پر یادفتر اورفیکٹری میں جو نہی اپنی سیٹ پر بیٹھیں آپ کو نیند آنا شروع ہوجائے گی ۔جسم بالخصوص سراور کند ھے منوں وزنی ہوجائیں گے ۔دل میں گھبراہٹ، بے چینی، بے کلی اور اکتا ہٹ پیدا ہونا شروع ہوجائے گی۔
(۱۳)ازدواجی تعلقات سے نفرت :
بعض دفعہ میاں یابیوی کا دل ازدواجی تعلقات سے پھیردیا جاتا ہے ایک فریق کی خواہش کے باوجود دوسرا فریق ازدواجی وظیفے سے اتنا متنفر ہوجاتا ہے کہ وہ اس کا نام لینا بھی گوارانہیں کرتا ۔ آپس میں اٹھنا بیٹھنا اور تعلق صحیح ہے لیکن یہاں آکر وہ فریق (میاں یا بیو ی) اڑیل ٹٹوکی طرح ڈٹ جاتا ہے ۔ یہ عمل زیادہ تر بیوی پر کیا جاتاہے اور اس سے مقصود دونوں میں جدائی اور طلاق کروانا ہوتاہے۔
(۱۴) قوت مردمی کی بندش :
ایک مرد جسمانی اعتبارسے سوفیصد صحیح ہے لیکن اپنی بیوی کے پاس جب جاتا ہے تو وہ ازدواجی عمل کے حوالے سے اپنے آپ کو مکمل ناکارہ پاتاہے۔ ایسے بے شمار واقعات ہمارے گردوپیش میں ہوتے ہیں۔
(۱۵) مقام سے گرانا:
بعض دفعہ حاسدین اپنے حسد کی آگ بجھا نے کے لئے ایسا عمل کرتے ہیں کہ اپنے ٹارگٹ کو اس کے مقام سے گرا دیتے ہیں ۔ وہ اگر کسی بڑے یا اہم عہدے پر ہے تواس عہدے سے سبکدوش ہوجائے گا ۔ سما جی یاسیاسی سطح پر اگر اسے پذیر ائی حاصل ہے تو پذیر ائی کی جگہ لوگ اسپر گند ے انڈے پھینکنے لگیں گے۔
(۱۶) جسم پر نیل کے نشان :
سحرزدہ آدمی کے جسم پر کسی چوٹ یازخم کے بغیر نیل کے نشان پڑنے لگ جاتے ہیں ۔ اگر یہ نشان جسم پر ظاہر ہونے لگیں اور مریض زیادہ معمر بھی نہ ہوتو کسی روحانی معالج کو چیک کرائیں ۔ اگر معمر آدمی کو ایسا نظر آئے تو ڈاکٹر سے رابطہ کریں اسے نمونیہ یا فالج کا خطرہ ہے۔
(۱۷) کندھوں اور سر پر وزن محسوس ہونا:
جس آدمی پر جادوچل گیا ہو کسی تھکن کے بغیر وہ اپنے کند ھوں، گُدی اور سر پر وزن سامحسوس کرتا ہے۔
(۱۸) خون کے چھینٹے / پانی کے چھینٹے :
بعض دفعہ مسحور کے بدن،کپڑوں یاگھر کی دیواروں وغیرہ پر اچانک ایسی جگہ خون کےچھینٹے آگرتے ہیں جہاں کسی کے باہرسے پھینکنے کا امکان نہیں ہوتا۔ اور بعض دفعہ خون کی بجائے پانی کے چھینٹے پڑتے ہیں۔ یہ خطر ے کا واضح الارم ہے ۔ اس کے بجنے کے بعد بھی سوئے رہنا اپنے آپ کو دشمن کے رحم وکرم پر چھوڑنے کے مترادف ہے۔
(۱۹) برے خواب
سحرکے مریض کو بعض دفعہ خواب میں گدلا پانی، کالی بھینسیں، کالے سانپ، بھول بھلیاں، بند گلیاں اور بندراستے نظر آتے ہیں ۔ اگر یہ خواب کثرت سے آنے لگیں یا بار بار قبرستان اور انجان مردے نظر آنے لگیں تو بھی کسی ماہر سے رجوع کرنا چاہیے۔ لیکن اگر اپنے عزیزوں میں سے کوئی مراہو ا شخص نظر آئے تواس سے نہیں ڈرنا چاہیے۔ اس نے آپ ہی کو نظر آنا ہے ،انجان لوگوں کو تو نظر نہیں آنا
۲۰جسم میں عجیب تکلیف
جسم میں ایسالگتاہے کی کوئی سوئیاں چھبو رہا ہے یا ایسا بھی محسوس ہوتاہےجیسےکوئی بلیڈسے کٹ لگا رہا ہو یا ایسا لگتا ہے جیسےبجلی کی لہر سا عجیب سا درد ہے یا جسم کےکسی ایک حصےمیں یاسارےجسم میں حد سے زیدہ جلن ہوتی ہے
۲۱حدسےزیادہ گرویدہ ہونا
اس صورت جس پرجادو ہوتاہے وہ جس نےجادو کروایا ہوتاہے اسکا نہ چاہتے ہوئےبھی مطیع ہوجاتاوہ جیسا کہے اسی طرح اسکی بات مانتا اسکی اپنی سوچ کام نہیں کرتی وہ رفتہ رفتہ ذہنی اورجسمانی طور پربیماررہنا شروع ہوجاتا باقی گھر کےلوگوں سےالگ اور چپ چپ سارہناشروع کردیتا ہےاگرکوئی دوسرااس سےبات کرےتووہ توجہ سےنہیں سنتا سنی ا ن سنی کر دیتا ہے کبھی کبھی اس کا رونے کو دل کرتا ہے


Share:

1 comment:

  1. 10513: ہم اپنے آپ کو جنوں کی ایذا سے کیسے بچائیں
    مجھے جنوں کی طرف سے مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ میں جنوں کو جو کہ اب تک میرے تمام زندگی میں مختلف حالات میں ظاہر ہوتے رہے ہیں دیکھتی ہوں اور مجھے کبھی تنگی نہیں ہوتی تھی لیکن کچھ عرصہ سے تنگی ہورہی ہے۔ جب ہم اپنے فلیٹ میں منتقل ہوئے تو شروع ایام کے اندر میں نے جن کو دیکھا اور یہ وقفہ وقفہ سے ہوتا رہا یہاں تک کہ میں ان جنوں کے امور سے متنبہ رہتی تھی مثلا۔ یہ کہ دروازے خود بخود کھل جایا کرتے اور میں انہیں دیکھتی اور انکی آواز سنتی تھی۔ ۔ ۔ الخ۔
    لیکن اب لگتا ہے معاملات بہت زیادہ بدلنے شروع ہوگئے ہیں یہاں تک کہ بعض اعمال روزانہ اور بار بار پیش آنا شروع ہوگئے ہیں تو ان اعمال کی بنا پر مجھے اپنے گھر میں راحت نہیں ہورہی حتی کہ میری یہ حالت ہو گئی ہے کہ میں اپنے اس گھر میں رہنا ہی نہیں چاہتی جن دروازے کھول دیتے ہیں اور میرا نام لے کر چیختے ہیں تو میں اپنی نیند سے ہڑبڑا کر اٹھ بیٹھتی ہوں۔
    مجھے بعض اشیاء مارتے ہیں اور بلی کی شکل میں ظاہر ہوتے اور میرے کمپیوٹر اور ٹیلی فون کے ساتھ کھیلتے ہیں اور میں ان کا سایہ دیکھ رہی ہوتی ہوں۔ وغیرہ معاملہ بہت ہی عجیب شکل اختیار کرگیا ہے مجھے کچھ سمجھ نہیں آتا میں ان مشاکل کے ساتھ کیسے پیش آوں میں امید رکھتی ہوں کہ میرا یہ گھر بدلنا اس مشکلات کو ختم کردے گا۔
    میں نے سورت بقرہ اور اخلاص اور الفلق اور الناس پڑھنے کی کوشش کی ہے اور اپنے گھر میں قرآن کی کیسٹیں لگا کر رکھتی ہوں تاکہ یہ معاملہ ختم ہوجائے لیکن جیسے ہی تلاوت ختم ہوتی ہے جن نئے سرے اور شکل میں ظاہر ہوجاتے ہیں اور کوئی بھی کام کرکے مجھے اپنی موجودگی کا احساس دلاتے ہیں (اکثر اوقات میں) کبھی تو ٹیپ ریکاڈ بند کردیتے ہیں اور کبھی قرآت کے دوران کمپیوٹر ری سٹارٹ کردیتے ہیں۔ ۔ ۔ ۔ ۔
    اور یہ کئ بار ہوا ہے اور ایسے ہی جن میری خوابوں میں بھی اکثر آتے ہیں تو میں اس حالت سے نکلنے کا راہ نہیں جانتی تو اس موضوع کے متعلق آپکے جواب سے آپکی بہت قدر کرونگی یا پھر کوئی نصیحت کریں اور امید کرتی ہوں کہ یہ جلدی کریں گے۔

    ReplyDelete

Kindly Report Dead or Broken link..

General Help
+923357764997
+923457818315

CONTECT US

ہمارے متعلق شفا ء علی آن لائین تشخیص و علاج

ہمارے متعلق شفا ء علی آن لائین تشخیص و علاج کی سروس  لوگو ں کے مسائل اور وقت کی ضرورت کے تحت شروع کی گئی دور درازکے  اور ایسے لوگ جو ...

Blog Archive